دبئی کے حکمران کی چھٹی بیوی فرار۔۔جاتے جاتے کیا کچھ لے گئی محمد بن راشد المکتوم نے بھاگ جانے والی بیوی کو غدار قرار دے دیا

دبئی (نیوز پاکستان) دبئی کے حکمران اور متحدہ عرب امارات کے وزیراعظم محمد بن راشد المکتوم کی چھٹی بیوی دبئی سے فرار ہو گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق حیا بنت حسین جو کہ حکمرانِ دبئی کی چھٹی بیوی تھی اور ان کے دو بچوں کی ماں بھی تھی کروڑوں روپے اور دونوں

بچوں کو لے کر متحدہ عرب امارات سے چلی گئی ہیں۔ ذرائع کے مطابق حیا اور محمد بن راشد المکتوم میں کافی عرصے سے ان بن چل رہی تھی اور اب وہ دبئی سے فرار ہو گئی ہیں۔ محمد بن راشد المکتوم نے بیوی کے اس فعل کو غداری قرار دے دیا اور اس کی شدید مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اب انہیں فرق نہیں پڑتا کہ حیا جیے یا مرے۔ ذرائع کے مطابق شہزادی حیا بنت حسین حکمرانِ دبئی سے طلاق لینا چاہتی تھیں لیکن جب وہ کامیاب نہ ہو سکیں تو 45سالہ شہزادی اپنے 7سالہ بیٹے اور 11سالہ بیٹی کو لے کر فرار ہو گئیں۔ذرائع نے بتایا ہے کہ حیا بنتِ حسین دبئی سے فرار ہو کر جرمنی چلی گئی ہیں اور اب وہ وہیں رہائش اختیار کرنا چاہتی ہیں۔انہوں نے جرمنی کی حکومت سے سیاسی پناہ بھی مانگ لی ہے اور سیاسی پناہ کی درخواست جمع کروا دی ہے۔ اطلاعات کے مطابق شہزادی جاتے ہوئے اپنے ساتھ 31ملین پاوٴنڈ بھی لے گئی ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ حیا بنتِ حسین اردن کے بادشاہ عبدللہ کی سوتیلی بہن ہیں۔ ایک امکان یہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے کہ وہ

لندن میں بھی چھپی ہو سکتی ہیں۔ حکمرانِ دبئی نے اپنے انسٹاگرام اکاوٴنٹ سے اپنی بیوی کے بھاگ جانے کو غداری قرار دیتے ہوئے اس کی شدید مذمت کی ہے، انہوں نے اپنا یہ پیغام اشعار کی صورت میں لکھ کر شئیر کیا ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ سال محمد بن راشد المکتوم کی بیٹی کی بھی دبئی سے بھاگنے کی خبریں گردش کرتی رہیں تھیں لیکن تب حکام نے اس خبر کی تردید کی تھی اور شہزادی کی اپنے گھر میں تصاویر جاری کر کے تصدیق کی تھی کہ شہزادی اپنے گھر میں موجود ہیں۔ تاہم اب دبئی کے حکمران اور متحدہ عرب امارات کے وزیراعظم محمد بن راشد المکتوم کی چھٹی بیوی دبئی سے فرار ہو گئی ہے اور انہوں نے خود بیوی کے فرار ہونے کی تصدیق بھی کر دی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں