آصف زرداری اور فریال تالپور کی رہائی کی تیاریاں۔۔اہم فیصلہ کرلیا گیا

کراچی (نیوز پاکستان) سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور نے ضمانت کے لیے درخواست دائر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس ضمن میں قانونی ٹیم نے مشاورت بھی شروع کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق جعلی اکاؤنٹس اور میگا منی لانڈرنگ کیس میں سابق

صدر آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور نے ضمانت حاصل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ جس کے لیے آصف زرداری کی قانونی ٹیم نے مشاورت شروع کردی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق آصف زرداری اورفریال تالپورکی درخواست ضمانت وکیل کےتوسط سے دائرکی جائے گی۔ درخواست ضمانت چند روز میں اسلام آباد ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں دائر کی جائے گی۔ قانونی ٹیم کا کہنا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی عبوری ضمانت مسترد ہونے کے فیصلے قانونی نکات کونظراندازکیا گیا۔سابق صدر نے قانون کے مطابق نیب سے تحقیقات میں تعاون کیا، آصف زرداری منی لانڈرنگ اور جعلی اکاونٹس میں ملوث نہیں۔ درخواست میں سابق صدر

آصف زرداری اور فریال تالپور کی ضمانت پر رہائی کی استدعا کی جائے گی۔ یاد رہے 10 جون کو جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر آصف زرداری اور فریال تالپور کی درخواست ضمانت مسترد کردی تھی اور گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔جس کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری کو نیب نے حراست میں لے کر احتساب عدالت سے ان کا 21 جون تک جسمانی ریمانڈ حاصل کر لیا تھا۔ جبکہ ان کی ہمشیرہ فریال تالپور بھی جسمانی ریمانڈ پر نیب کی حراست میں ہیں اور ان سے تفتیش کی جا رہی ہے۔ سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور سے کی جانے والی تفتیش کے نتیجے میں مزید گرفتاریاں ہونے کا امکان بھی ظاہر کیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں