وزیراعظم نے اپوزیشن کے ساتھ میثاق معیشت طے کرنے کی منظوری دے دی

اسلام آباد (نیوز پاکستان) وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن کے ساتھ میثاقِ معیشت طے کرنے کی منظوری دے دی۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے مابین ملاقات ہوئی۔ملاقات میں ہاؤس چلانے کے

حوالے سے حکومتی حکمت عملی ،حکومتی اراکین اور اپوزیشن کی بجٹ پر کی جانے والی تقاریر پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس کے علاوہ خصوصی پارلیمانی کمیٹیوں کی تشکیل پر بھی بات چیت ہوئی۔اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے وزیراعظم عمران خان کو بجٹ پاس کروانے کے حوالے سے اپنی حکمت عملی پر بریفنگ دی گئی۔میڈیا رپورٹس میں مزید بتایا گیا ہے کہ اس ملاقات میں وزیر اعظم نے اپوزیشن کے ساتھ میثاق جمہوریت طے کرنے کی منظوری دے دی ہے۔امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ میثاق معیشت کمیٹی میں سینیٹ اور قومی اسمبلی کے تمام سیاسی جماعتوں کے اراکین شامل کیے جائیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ میثاق معیشت کمیٹی کے قیام کی تجویز اپوزیشن جماعتوں نے دی

تھی تاکہ سیاسی جماعتوں کے اہم رہنما ملکی معیشت میں بہتری کے لیے تجاویز دے سکیں۔خیال رہے سابق صدر آصف علی زرداری نے حکومت کو مل کر بیٹھنے کی پیشکش کی تھی۔ قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری نے کہا کہ آئیں میثاق معیشت کرتے ہیں،پاکستان ہے تو ہم سب ہیں،حکومت کا بجٹ اخباروں میں دیکھا۔حساب کتاب بند کرو آگے کی بات کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کے قتل کے بعد بھی میں نے ‘پاکستان کھپے’ کا نعرہ لگایا تھا۔ ملک میں گرفتاریوں کے معاملے پر ان کا کہنا تھا کہ اگر میں گرفتار ہوں گا تو عام آدمی گھبرائے گا کہ اگر آصف زرداری گرفتار ہوسکتا ہے تو ہمارا کیا ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں