شہباز شریف نے صرف ملک کو لوٹا ہی نہیں بلکہ متاثرین کی رقم بھی چوری کی۔۔۔برطانوی اخبار کے تہلکہ خیز دعوے پر حکومتی ردعمل بھی آگیا

اسلام آباد (نیوز پاکستان) شہباز شریف پر زلزلہ متاثرین کے لیے ملنے والی امداد کے کروڑوں روپے خردبرد کرنے پر حکومت کا ردِ عمل بھی سامنے آگیا ہے۔ پاکستان تحریکِ انصاف کی رہنما اور وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ ”شرم

کی بات ہے کہ ان لٹیروں نے نہ صرف پاکستانی قوم کا پیسہ لوٹا بلکہ متاثرین کے لیے آنے والی امداد کے پیسے بھی کھا گئے“۔واضح رہے کہ آج برطانوی اخبار ڈیلی میل نے ایک رپورٹ شائع کی جس میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف پر الزام لگایا گیا ہے کہ انہوں نے زلزلہ متاثرین کے لیے برطانیہ کی جانب سے دی جانے والی امداد میں کروڑوں پاوٴنڈز کی خردبرد کی۔شہباز شریف پہ برطانیہ میں منی لانڈرنگ کا کیس کھلنے کا امکان ہے۔برطانوی اخبار ڈیلی میل کے مطابق شہباز شریف نےزلزلہ متاثرین کے فنڈز کے اربوں روپے خردبرد کر منی لانڈرنگ کے ذریعے برطانیہ بھیج دیے۔ برطانوی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ شہباز شریف نے زلزلہ متاثرین کے لیے آنے والی امداد میں سے

کروڑوں روپے خردبرد کر کے برطانیہ میں اپنے اکاوٴنٹ میں بھیج دیے اور یہ پیسے منی لانڈرنگ کے ذریعے بھیجے گئے۔ شہباز شریف کے لیے منی لانڈرنگ کرنے والا آفتاب محمود نامی شخص سامنے آیا ہے جس نے اس منی لانڈرنگ کا اعتراف کیا ہے۔برطانوی اخبار کے مطابق ڈی ایف آئی ڈی فنڈ میں سے بھی کچھ پیسے خردبرد کیے گئے جنہیں پہلے منی لانڈرنگ کے ذریعے برمنگھم بھیجا گیا جہاں سے وہ شہباز شریف کے اکاوٴنٹ میں منتقل کر دیے گئے۔اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ 2003میں شہباز شریف کے اثاثہ جات ڈیڈھ کروڑ پاوٴنڈز تھے جو کہ 2018میں بڑھ کے20کروڑ پاوٴنڈز تک پہنچ گئے ۔ اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ شہباز شریف کے اکاوٴنٹس میں لاکھوں پاوٴنڈ کی مشتبہ ٹرانزیکشن ہوئیں۔اخبار نے بتایا ہے کہ برطانیہ نے پنجاب کے لیے 50کروڑ پاوٴنڈ کی امداد دی تھی جو کہ منی لانڈرنگ کے ذریعے واپس برطانیہ میں شہباز شریف کے اکاوٴنٹ میں بھیج دی گئی۔ اس حوالے سے کہا جا رہا کہ شہباز شریفکے خلاف برطانیہ میں کیس کھولے جانے کا امکان ہے اور اس حوالے سے تحقیقات شرع کر دی گئی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں