شرمناک الزام، امریکا نے چیف جسٹس کو ویزہ دینے سے صاف انکار کردیا

لاہور (نیوز پاکستان) امریکا نے چیف جسٹس کو ویزہ دینے سے صاف انکار کردیا۔ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سردار محمد شمیم خان نے دیگر 4 ججز کے ہمراہ امریکہ کے دورے پر جانا تھا جہاں انہوں نے ایک کانفرنس میں شرکت کرنا تھی۔ جس کیلئے چیف جسٹس سردار شمیم نے امریکی ویزے کیلئے اپلائی کیا ہو اتھا۔ لیکن بتایا گیا ہے کہ امریکا نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سردار شمیم کو ویزہ دینے دینے سے انکار کردیاہے۔ چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ کو ویزہ جاری نہ کرنا اس وقت سوشل میڈیا پر بہت بڑاایشو بنا ہوا ہے۔
تبدیلی سرکار اور نئے پاکستان میں بھی عالمی سطح پر پاکستان کے سبز پاسپورٹ کی عزت وقار کو بلند نہیں کیا جاسکا، حکومت کے وعدے کھوکھلے نعرے ثابت ہوئے۔
سفارتی ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ امریکی سفارتخانے نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کی داڑھی پر اعتراض کیا ہے جبکہ کہا گیا ہے کہ ان کے ماتھے پر محراب بھی ہے۔ ایسی مذہبی شخصیت کو امریکہ کا ویزہ نہیں دیا جا سکتا۔ وکلاء برادری نےمحض داڑھی کو جواز بناکر پاکستان کے سب سے بڑے صوبے کے چیف جسٹس کو ویزا نہ دینے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ دوسری طرف عوام الناس نے بھی امریکا کی جانب سے اسلام دشمنی کی بنیاد پر چیف جسٹس کے عہدے پر فائز شخصیت کو ویزا جاری نہ کرنے پر کڑی تنقید کی ہے۔اور حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امریکی سفیر کو طلب کرے اور سخت سے سخت احتجاج ریکارڈ کروائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں