سزا کیساتھ نااہلی بھی ختم! لاہور ہائیکورٹ سے نواز شریف کے لئے حوصلہ افزا خبر آگئی

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) نواز شریف کی نااہلی ختم کی جائے،الیکشن کمیشن نے28جولائی کوغیر قانونی طور پر نوازشریف کو ڈی نوٹیفائی کیا، لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی گئی درخواست پر وفاقی حکومت اور اسپیکر قومی اسمبلی سے جواب طلب کر لیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف کی نااہلی کیلئے کوششیں شروع

کر دی گئی ہیں۔ اس حوالے سے ایک شہری کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی ہے۔لاہور ہائیکورٹ میں شہری کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو الیکشن کمیشن نے28جولائی کوغیر قانونی طور پر ڈی نوٹیفائی کیا، لہذا ان کو ڈی نوٹیفائی کرنے کا فیصلہ معطل کیا جائے۔ لاہور ہائیکورٹ نے شہری کی جانب سے دائر کی گئی درخواست سماعت کیلئے منظور کر لی ہے۔ لاہور ہائیکورٹ نے اس حوالے سے وفاقی حکومت اور اسپیکر قومی اسمبلی سے جواب طلب کر لیا ہے۔ واضح رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو پاناما کیس کے دوران اقامہ رکھنے، اسے ظاہر نہ کرنے کی بنیاد پر نااہل قرار دے دیا گیا تھا۔ نواز شریف کو سپریم کورٹ کی جانب سے آرٹیکل 62 اور 63 کے معیار پر پورا نہ اترنے کے تحت نااہل قرار دیا گیا تھا۔ جبکہ بعد ازاں سپریم کورٹ کے حکم پر نیب نے احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نواز شریف کیخلاف ریفرنس بھی دائر کیے گئے تھے۔ ان ریفرنس میں بعد ازاں سابق وزیراعظم نواز شریف کو جیل کی سزا سنائی گئی تھی۔ اسی باعث نواز شریف ان دنوں جیل کی سلاخوں کے پیچھے موجود

ہیں۔ سابق وزیراعظم نواز شریف لاہور کے کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں۔ تاہم انہیں طبیعت کی خراجی کے باعث گزشتہ ہفتے لاہور کے سروسز ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا جہاں ان کا علاج جاری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں